بلوچستان میں تعلیمی اداروں کی حالت زار کا نوٹس لیا جائے ۔ بلوچ طلبا ایکشن کمیٹی

بدھ 26 نومبر, 2014

بلوچ طلبا ایکشن کمیٹی کے مرکزی ترجمان نے کہا کہ موجودہ صوبائی حکومت کی جانب سے بلوچستان میں تعلیمی ایمرجنسی کے اعلان کے باوجود اب تک بلوچستان کے مختلف علاقوں میں تعلیمی اداروں کی حالت ناگفتہ بہ ہے جہاں پہ حصول تعلیم کیلئے میسر سہولتات کا فقدان ہے اور ساتھ ہی اب تک بھی بیشتر سکولوں میں اساتذہ غیر حاضر ہیں اور اس حوالے سے بلوچ طلبا ایکشن کمیٹی نے بلوچستان کے بیشتر علاقوں میں غیر حاضر اساتذہ کی کوائف جمع کرنے کا آغاز کیا ہے اور بہت جلد علاقہ، سکول اور غیر حاضر اساتذہ کی لسٹ ذمہ دار حلقوں سمیت میڈیا کو فراہم کریں
مرکزی ترجمان نے بلوچستان حکومت سے مطالبہ کیا کہ سیاسی بنیادوں کے بجائے بلوچستان میں باصلاحیت و تعلیم یافتہ نوجوانوں کی صلاحیتوں کو ابھرا جائے اور ان سے استفادہ کیا جائے ۔

image_pdfimage_print

[whatsapp] خبریں. RSS 2.0