بی آر اےو بی ایل ایف نے مختلف واقعات کی ذمہ داری قبول کرلی

اتوار 14 دسمبر, 2014

ہمگام نیوز۔۔۔۔۔بلوچ ری پبلکن آرمی کے ترجمان سرباز بلوچ نے نامعلوم مقام سے سیٹلائیٹ فون کے ذریعے اخباری دفاتر سے بات کرتے ہوئے بتایا کہ بی آر اے کے سرمچاروں نے جمعہ کے روز شام کےوقت ہوشاپ میں قابض فورسز کے مرکزی کیمپ پرگرنیڈ لانچروں ، راکٹ لانچروں اور خودکار ہتھیاروں سے حملہ کیاحملہ کافی دیر تک جاری رہا۔جس میں دشمن فوج کے چاراہلکاروں کو ہلاک اور متعدد زخمی کئے۔حملے کی ویڈیوبنالی گئی ہے جو جلد تنظیم کی ویب سائٹ پر جاری کردی جائے کی۔ایک اور کاروائی میں ڈیرہ بگٹی علاقے گوہ پٹ میں سوئی سے کراچی جانے والی چوبیس انچ قطر کی گیس پائپ لائن کو دھماکہ خیز مواد نصب کر کے تباہ کردیا جس میں کراچی کے کئی علاقوں میں گیس کی سپلائی معطل ہو گئی۔ ہما ری کاروائیاں بلوچستان کی آزادی تک جاری رہے گی

بلوچستان لبریشن فرنٹ کے ترجمان گہرام بلوچ نے سیکورٹی فورسز پر حملوں کی ذمہ داری قبول کرتے ہوئے نامعلوم مقام سے سیٹلائٹ فون کے ذریعے کہا آواران کبڑی کے مقام پر آرمی کے کانوائے پر گھات لگائے کر سرمچاروں نے حملہ کیا جس سے فورسز کے ۳ اہلکار ہلاک ۵ زخمی ہوئے اور تین گاڑیوں کو نقصان پہنچا۔کل رات مند کے علاقے ردیگ میں واقع ایف سی کیمپ پر سرمچاروں نے راکٹ اور جدید ہتھیاروں سے حملہ کر کے کئی اہلکاروں کو ہلاک و زخمی کیا۔مقبوضہ بلوچستان کی آزادی تک قابض ریاستی فورسز پر حملے جاری رہیں گے

image_pdfimage_print

[whatsapp] خبریں. RSS 2.0