داعش عراق میں کیمیائی ہتھیاراستعمال کررہی ہے،جرمن فوج کا دعویٰ

جمعرات 13 اگست, 2015

برلن(ویب ڈیسک )جرمن وزارت دفاع نے دعوی کیا ہے کہ عراق کے شمالی علاقے میں سخت گیر جنگجو گروپ دولت اسلامیہ(داعش)کے خلاف جنگ آزما کرد فورسز پر چند روز قبل کیمیائی ہتھیاروں سے حملہ کیا گیا ہے۔وزارت دفاع کے تر جمان نے جمعرات کو فرانسیسی خبررساں ادارے کوبتایاکہ عراق کے خود مختار شمالی علاقے کردستان کے دارالحکومت اربیل کے جنوب مغرب میں واقع علاقے میں کردوں پر کیمیائی ہتھیاروں سے حملہ کیا گیا تھا۔اس کے نتیجے میں بعض کرد جنگجوں کا نظام تنفس متاثر ہوا ہے اور انھیں سانس لینے میں دشواری کا سامنا کرنا پڑا ہے لیکن انھیں تربیت دینے والے جرمن فوجیوں کو کوئی نقصان نہیں پہنچا ہے۔ترجمان نے مزید بتایاکہ بغداد سے امریکی اور عراقی ماہرین صورت حال کے جائزے کے لیے اربیل روانہ کردیے گئے ہیں۔انھوں نے فوری طور پر داعش کو کیمیائی ہتھیاروں کے اس حملے کا ذمے دار قرار نہیں دیا ہے۔

image_pdfimage_print

[whatsapp] خبریں. RSS 2.0