دشمن کے سامنے قومی بندوق پھینکنے کے بجائے شہید شاکر نے موت کو ترجیح دی

بدھ 21 جون, 2017

کوئٹہ (ھمگام نیوز ) پاکستان اور اس کے ریاستی دلال سمیت ڈیتھ اسکواڈ نے شہید شاکر بلوچ کو زیر کرنے میں بری طرح ناکام رہے ـ تفصیلات کے مطابق گزشتہ روز پسنی میں شہید شاکر اور سید عیسی نوری کے ڈیتھ اسکواڈ کے درمیان جھڑپ ہوئ جس سے شاکر بلوچ شہید ہوگئے ـ ذرائع کا کہنا ہے عرصہ ہوگیا ہے پاکستان اپنے دلالوں سے سے یہ مانگ کر رہی تھی کہ کسی طرح شاکر بلوچ کے خاندان والوں کو دباؤ میں لایا کریں تاکہ شاکر بلوچ اپنے خاندان سے مجبور ہو کر سرنڈر کرے معلومات کے مطابق سید عیسی نوری نے شہید شاکر بلوچ کے والدین کے روحانی پیشوا ہیں اس لیئے سید عیسٰی نوری نے اپنی اسی طاقت کو استعمال کرکے شہید کے والدین پر برابر دباؤ ڈالتا رہا کہ اپنے فرزند لا کر سرنڈر کروائیں ـ عیسی نوری نے شہید شاکر کے والدین سمیت اسکے بہن بھائ اور زوجہ کو دھمکی دی تھی اگر شاکر نے سرکار کے سامنے سرنڈر نہیں کیا تو ہم ان کے بیوی بچوں کو اٹھا لیں گے جس سے شہید شاکر بلوچ کے والدین خوف زدہ ہوکر اپنے فرزند کو دھوکے میں لاکر اپنے گھر بلا لیا جب وہ گھر آئے تو ماں باپ نے کہا کہ واجہ عیسی نوری کی بات مان لیں وہ ہمارے واجہ ہیں تو پھر شہید نے کہا عسی نوری کے لوگوں کو بلا لیں جب سید عیسی نوری کے ڈیتھ اسکواڈ ان کے گھر پہنچے ان کو سرنڈر کرواکر ریاست کی خوشنودی حاصل کرنے اور اپنے مراعات سمیٹنے کے لیئے تو شہید شاکر نے ایک سچے وطن کے سپاہی کی طرح خوف و لالچ کو ٹھوکر مار کر دشمن کے ڈیتھ اسکواڈ پر حملہ کردیا دوسری جانب عسی نوری کے لوگ بھی مسلح تھے دونوں جانب جھڑپ ہوئ جس سے شہید شاکر نے وطن کی ترازو میں موت کو گلے لگا لیا بہت سے ذرائع سے یہ خبر آ رہی ہے کہ شہید کی جب بندوق کی گولی ختم ہونے والی تھی تو اس نے گرفتار ہونے کے بجائے خود کو گولی مار کر شہادت کو ترجیح دی ـ جبکہ دشمن اور اس کے کاسہ لیس شہید شاکر کو زیر کرنے میں ناکام رہے اور شہید نے بہادری کا ثبوت دیتے ہوئے گلزمین پر اپنی جان نچاور کردی ـ دریں اثنا سید عیسی نوری کے ڈیتھ اسکواڈ کو بھی کافی نقصان اٹھانا پڑا لیکن ذرائع کا کہنا کہ عیسی نوری اپنے نقصانات کو چھپا رہی ہے ـ شہید شاکر بلوچ نے ایک ایسا عمل سرانجام دے کر دشمن ریاست کو ایک پیغام دیا کہ سچے وطن کا سپاہی اور رکھوالے کبھی بھی قوم سے غداری نہیں کریں گا اور نا ہی آپکے لالچ اور دھوکے میں آکر بلوچ شہدا کے لہو کا سودا کریں گا بلکہ وہ دیگر قومی سپاہی کی طرح وطن کی آزادی کے لیئے اپنی جان کا نذرانہ پیش کرکے مادر وطن کا قرض ادا کریں گا ـ

image_pdfimage_print

[whatsapp] خبریں. RSS 2.0