سیندک : چائنیز انجینئر نے گاڑی سے بلوچ فرزندکو کچل دیا

پیر 10 جولائی, 2017

چاغی ( ہمگام نیوز) سیندک میں چین سے تعلق رکھنے والے انجینئر نے ایک بلوچ ملازم کو گاڑی سے کچل کر قتل کردیا ، تفصیلات کے مطابق سیندک پروجیکٹ جس میں چین سے آنے والے والے انجینئر ز کی ایک بڑی تعداد کام کررہا ہے آج گاڑی چلاتے ہوئے ایک بلوچ فرزند کو گاڑی سے جان بوجھ کر قتل کردیا ، علاقائی زرائع کے مطابق ہلاک ہونے والا بلوچ فرزند سعید احمد اپنے گھر کا واحد سہارا تھا جو بے روزگاری کی وجہ سے سیندک پروجیکٹ میں ملازم تھا اسے آج قابض پاکستان کی عسکری و اقتصادی اتحادی ریاست چین کے درندہ صفت انجینئر نے گاڑی سے کچل دیا۔
سیندک سے بعض زرائع کے مطابق اس قبل بھی کئی بلوچ فرزند وں کو جان بوجھ کر گاڑیوں سے کچلنے کی کوشش کی گئی جس کے سبب کئی بلوچ نوجوان ہاتھ اور پاؤں سے معزور ہوچکے ہیں ۔واضح رہے کہ سیندک پرجیکٹ میں ہزاروں بلوچ کام کررہے ہیں لیکن وہاں پہ ان بلوچوں کو پنجاب سے آنے والے ملازموں کی نسبت کافی کم معاوضہ دیا جارہا ہے ۔
اور ساتھ ہی انتہائی خطرناک جگہوں پہ کام کرنے کے باوجود کوئی بھی حفاظتی اقدامات بھی نہیں کئے جارہے ہیں جس کی وجہ کئی ایک بلوچ فرزند حادثات کا شکار ہوچکے ہیں ۔

image_pdfimage_print

[whatsapp] خبریں. RSS 2.0