شہید وسیم بلوچ بی آر اے سے منسلک تھے انکی جدوجہد کو سرخ سلام پیش کرتے ہیں۔

منگل 28 اکتوبر, 2014

کوئٹہ(ہمگام نیوز) بلوچ ری پبلکن آرمی کے ترجمان سرباز بلوچ نے نامعلوم مقام سے سیٹلائیٹ فون کے ذریعے اخباری دفاتر سے بات کرتے ہوئے کہا کہ ہمارے سرمچاروں نے ڈیرہ بگٹی کے علاقے زین کوہ میں ٹوبہ کے مقام پر قابض پاکستانی فورسز کی پیدل گشت پر گھات لگاکر ریموٹ کنٹرول بم سے حملہ کیا ۔ حملے میں دو اہلکار ہلاک جبکہ تین زخمی ہوگئے۔ انھوں نے اس حملے کی ذمہ داری قبول کرتے ہوئے مزید بتایا کہ بی آر اے کے سرمچار وسیم بلوچ ولد شہید ماسٹر عبدالرحمن بلوچ کو قابض فورسز کی جانب سے اغواء کرنے کے بعد شہید کیا گیا ہے ۔ انھوں نے بتایا کہ شہید وسیم بلوچ کو پنجگور کے علاقے چتکان سے ریاستی فورسز نے مقامی ایجنٹوں کی مدد سے اغواء کیا اور پانچ روز بعد انکی مسخ شدہ لاش پھینک دی گئی ہے۔ سرباز بلوچ نے کہا کہ شہید وسیم بلوچ گزشتہ دو سالوں سے بی آر اے سے منسلک تھے اورایک بہادر اور ایماندار کی حیثیت سے بلوچ وطن کی آجوئی کی خاطر قابض دشمن سے نبرد آزما تھے۔ بلوچ ری پبلکن آرمی شہید کو ان کی عظیم جدوجہد اورقربانی پر سرخ سلام اورخراج تحسین پیش کرتے ہوئے شہداء کے مشن کو جاری رکھنے کا عزم کرتی ہے۔
image_pdfimage_print

[whatsapp] خبریں. RSS 2.0