چین میں ہولناک سمندری طوفان

اتوار 12 جولائی, 2015

بیجنگ (ہمگام نیوز) مشرقی چین میں ایک انتہائی طاقتور سمندری طوفان نے فضائی ٹریفک اور ریلوے کے نظام کے ساتھ ساتھ بحری جہازوں کی آمد و رفت کو بھی بری طرح سے متاثر کیا ہے جبکہ ایک ملین سے زائد افراد کو محفوظ مقامات پر منتقل کر دیا گیا ہے۔

نیوز ایجنسی روئٹرز نے مقامی میڈیا کے حوالے سے بتایا ہے کہ شہریوں کے انحلاء کی یہ کارروائیاں ژے جیانگ اور جیانگ سُو نامی صوبوں میں عمل میں لائی گئی ہیں۔ بتایا گیا ہے کہ چین کے مشرقی ساحلوں کو اپنی لپیٹ میں لینے والا ’چَن ہوم‘ نامی یہ طوفان 162 کلومیٹر فی گھنٹہ کی رفتار سے چلنے والی ہواؤں کے ساتھ ژُو شان نامی شہر سے ٹکرایا ہے۔ ٹکرانے سے پہلے اس کی رفتار اس سے بھی زیادہ یعنی 175 کلومیٹر فی گھنٹہ ریکارڈ کی گئی تھی۔

محکمہٴ موسمیات کی جانب سے بتایا گیا ہے کہ یہ طوفان شنگھائی اور دیگر متاثرہ علاقوں میں اپنے ساتھ تیز ہواؤں کے ساتھ ساتھ شدید بارش بھی لایا ہے۔ کئی دیہات کے زیرِ آب آ جانے کی اطلاع ہے جبکہ متعدد علاقوں میں بجلی کی ترسیل کا نظام بھی درہم برہم ہو گیا ہے۔ تاحال کسی شخص کے زخمی یا ہلاک ہونے کی اطلاع نہیں ہے۔

سنہوا نیوز ایجنسی نے بتایا ہے کہ پروازوں اور ریل گاڑیوں کی منسوخی کے ساتھ ساتھ 51 ہزار سے زیادہ بحری جہاز بھی واپس بندرگاہوں میں پہنچ گئے ہیں۔

سال کے ان دنوں کے دوران بحیرہٴ جنوبی چین میں اس طرح کے طوفان ایک معمول ہوا کرتے ہیں۔ یہ طوفان گرم پانیوں سے طاقت حاصل کرتے ہوئے زور کے ساتھ خشکی سے ٹکراتے ہیں اور ٹکرانے کے ساتھ ہی اِن کا زور ٹوٹنا شروع ہو جاتا ہے۔

بتایا گیا ہے کہ چین کے بعد ’چَن ہوم‘ نامی یہ طوفان کوریائی جزیرہ نما کی طرف بڑھ جائے گا۔

image_pdfimage_print

[whatsapp] خبریں. RSS 2.0